نقش کی طرح ابھرنا بھی تمہی سے سیکھا

زہرا نگاہ

نقش کی طرح ابھرنا بھی تمہی سے سیکھا

زہرا نگاہ

MORE BYزہرا نگاہ

    نقش کی طرح ابھرنا بھی تمہی سے سیکھا

    رفتہ رفتہ نظر آنا بھی تمہی سے سیکھا

    تم سے حاصل ہوا اک گہرے سمندر کا سکوت

    اور ہر موج سے لڑنا بھی تمہی سے سیکھا

    اچھے شعروں کی پرکھ تم نے ہی سکھلائی مجھے

    اپنے انداز سے کہنا بھی تمہی سے سیکھا

    تم نے سمجھائے مری سوچ کو آداب ادب

    لفظ و معنی سے الجھنا بھی تمہی سے سیکھا

    رشتۂ ناز کو جانا بھی تو تم سے جانا

    جامۂ فخر پہننا بھی تمہی سے سیکھا

    چھوٹی سی بات پہ خوش ہونا مجھے آتا تھا

    پر بڑی بات پہ چپ رہنا تمہی سے سیکھا

    مأخذ :
    • کتاب : Waraq (Pg. 154)
    • Author : ZEHRA NIGAAH
    • اشاعت : 1980

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY