نزع میں گر مری بالیں پہ تو آیا ہوتا

میر مستحسن خلیق

نزع میں گر مری بالیں پہ تو آیا ہوتا

میر مستحسن خلیق

MORE BYمیر مستحسن خلیق

    نزع میں گر مری بالیں پہ تو آیا ہوتا

    اس طرح اشک میں آنکھوں میں نہ لایا ہوتا

    میرے خورشید نہ ہوتا یہ مرا روز سیاہ

    تو نے گر زلف میں مکھڑا نہ چھپایا ہوتا

    باغ جنت میں بھی کیا خوب گزرتی میری

    واں بھی سر پر جو تری زلف کا سایا ہوتا

    ناصحا چاک گریباں کے سلانے سے حصول

    چاک آنکھوں کا مری تو نے سلایا ہوتا

    پھول پڑتا نہ خلیقؔ آتش گل سے اس پر

    آشیاں ہم نے ٹک اونچا جو بنایا ہوتا

    مآخذ
    • کتاب : Ghazal Usne Chhedi(2) (Pg. 129)
    • Author : Farhat Ehsas
    • مطبع : Rekhta Books (2017)
    • اشاعت : 2017

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY