نیل فلک کے اسم میں نقش اسیر کے سبب

منیر نیازی

نیل فلک کے اسم میں نقش اسیر کے سبب

منیر نیازی

MORE BY منیر نیازی

    نیل فلک کے اسم میں نقش اسیر کے سبب

    حیرت ہے آب و خاک میں ماہ منیر کے سبب

    بن میں علاحدگی سی ہے اس کے جمال سبز سے

    دائم فضا فراق کی شجر‌ پیر کے سبب

    وسعت شہر تنگ دل سرما کی صبح سرد میں

    جاگی ہے ڈر کے خواب سے صورت فقیر کے سبب

    صحن مکاں میں شل ہے دست دعائے آگہی

    دل میں ہے شوق بے حساب حد کی لکیر کے سبب

    زخم وجود کی دوا بس وہی آخری صدا

    زندہ ہوں جس کے شوق میں صبر کبیر کے سبب

    سحر ہے موت میں منیرؔ جیسے ہے سحر آئنہ

    ساری کشش ہے چیز میں اپنی نظیر کے سبب

    مآخذ:

    • Book: 8 Gazal Go (Pg. 20)
    • Author: javed Shaheen
    • مطبع: Maktaba Meri Library,Lahore (1968)
    • اشاعت: 1968

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites