پاتا نہیں ہوں اور کسی کام سے لذت

آفتاب شاہ عالم ثانی

پاتا نہیں ہوں اور کسی کام سے لذت

آفتاب شاہ عالم ثانی

MORE BYآفتاب شاہ عالم ثانی

    پاتا نہیں ہوں اور کسی کام سے لذت

    جو کچھ کہ میں پاتا ہوں ترے نام سے لذت

    کیفیتیں اس دیدۂ میگوں سے جو پائیں

    پائی نہ کبھی بادے سے اور جام سے لذت

    ظاہر ہے تری نرگس مخمور سے مستی

    ٹپکے ہے ترے لعل مے آشام سے لذت

    پاتا ہوں مزا بیکلی اور درد کا ایسا

    پاوے ہے کوئی جیسے کہ آرام سے لذت

    ؔرکھتا ہے ہوس بوسے کی تیرے شہ عالم

    پاوے گا بہت تیرے اس انعام سے لذت

    RECITATIONS

    فصیح اکمل

    فصیح اکمل

    فصیح اکمل

    پاتا نہیں ہوں اور کسی کام سے لذت فصیح اکمل

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY