پہلے بنتے تھے مکاں بسنے بسانے کے لئے

اشراق عزیزی

پہلے بنتے تھے مکاں بسنے بسانے کے لئے

اشراق عزیزی

MORE BYاشراق عزیزی

    پہلے بنتے تھے مکاں بسنے بسانے کے لئے

    اب مکاں بنتے ہیں دنیا کو دکھانے کے لئے

    عشق تو یہ ہے ترے نام پہ مٹ جاؤں میں

    کیوں لکھوں نام ہتھیلی پہ مٹانے کے لئے

    تیرا عاشق تیرے قدموں سے لپٹ جائے گا

    روٹھنے والے تجھے آج منانے کے لئے

    غم زدہ دیکھ کے ہنستا ہے زمانہ اشراقؔ

    ہنسنا پڑتا ہے یہاں غم کو چھپانے کے لئے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY