پہلے چاہت کو تیز کر لے گا

حبیب کیفی

پہلے چاہت کو تیز کر لے گا

حبیب کیفی

MORE BYحبیب کیفی

    پہلے چاہت کو تیز کر لے گا

    پھر وہ مجھ سے گریز کر لے گا

    مسکرائے گا بات کرتے ہوئے

    بات یوں معنی خیز کر لے گا

    دو قدم ساتھ وہ چلے گا پھر

    اپنی رفتار تیز کر لے گا

    اس کو بیٹی کی شادی کرنی ہے

    قرض لے کر جہیز کر لے گا

    جب بھی آلودگی کو دیکھے گا

    خود کو وہ عطر بیز کر لے گا

    آئے گا مجھ سے دوستی کرنے

    جب وہ ناخن کو تیز کر لے گا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY