پہلے مفت میں پیاس بٹے گی

زبیر علی تابش

پہلے مفت میں پیاس بٹے گی

زبیر علی تابش

MORE BYزبیر علی تابش

    پہلے مفت میں پیاس بٹے گی

    بعد میں اک اک بوند بکے گی

    کتنے حسیں ہو ماشاء اللہ

    تم پہ محبت خوب جچے‌ گی

    ظالم بس اتنا بتلا دے

    کیا رونے کی چھوٹ ملے گی

    آج تو پتھر باندھ لیا ہے

    لیکن کل پھر بھوک لگے گی

    میں بھی پاگل تو بھی پاگل

    ہم دونوں کی خوب جمے گی

    یار نے پانی پھیر دیا ہے

    خاک ہماری خاک اڑے گی

    دنیا کو ایسے بھولوں گا

    دنیا مجھ کو یاد کرے گی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY