پہلے شرما کے مار ڈالا

بیدم شاہ وارثی

پہلے شرما کے مار ڈالا

بیدم شاہ وارثی

MORE BYبیدم شاہ وارثی

    پہلے شرما کے مار ڈالا

    پھر سامنے آ کے مار ڈالا

    ساقی نہ پلائی تونے آخر

    ترسا ترسا کے مار ڈالا

    عیسیٰ تھے تو مرنے ہی نہ دیتے

    تم نے تو جلا کے مار ڈالا

    بیمار الم کو تو نے ناصح

    سمجھا سمجھا کے مار ڈالا

    خنجر کیسا فقط ادا سے

    تڑپا تڑپا کے مار ڈالا

    یاد گیسو نے ہجر کی شب

    الجھا الجھا کے مار ڈالا

    فرقت میں ترے غم و الم نے

    تنہا مجھے پا کے مار ڈالا

    خنجر نہ ملا تو اس نے بیدمؔ

    آنکھیں دکھلا کے مار ڈالا

    مأخذ :
    • کتاب : jigar parah armagaan bedam shaah (Pg. 34)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے