پہلے تو ڈر لگا مجھے خود اپنی چاپ سے

نوشاد علی

پہلے تو ڈر لگا مجھے خود اپنی چاپ سے

نوشاد علی

MORE BYنوشاد علی

    پہلے تو ڈر لگا مجھے خود اپنی چاپ سے

    پھر رو دیا میں مل کے گلے اپنے آپ سے

    دیکھا ہے ہاں اسے ہے وہ کچھ ملتا جلتا سا

    مطرب کی میٹھی میٹھی سریلی الاپ سے

    تھی بات ہی کچھ ایسی کہ دیوانہ ہو گیا

    دیوانہ ورنہ بنتا ہے کون اپنے آپ سے

    رہنا ہے جب حریف ہی بن کر تمام عمر

    کیا فائدہ ہے یار پھر ایسے ملاپ سے

    آیا ادھر خیال ادھر محو ہو گیا

    کہنے کو تھا نہ جانے ابھی کیا میں اپنے آپ سے

    ہم اور لگائیں اپنے پڑوسی کے گھر میں آگ

    بھگوان ہی بچائے ہمیں ایسے پاپ سے

    نوشادؔ رات کیسی تھی وہ محفل طرب

    لگتی تھی دل پہ چوٹ سی طبلے کی تھاپ سے

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    پہلے تو ڈر لگا مجھے خود اپنی چاپ سے نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY