پروں کو کھول زمانہ اڑان دیکھتا ہے

شکیل اعظمی

پروں کو کھول زمانہ اڑان دیکھتا ہے

شکیل اعظمی

MORE BYشکیل اعظمی

    پروں کو کھول زمانہ اڑان دیکھتا ہے

    زمیں پہ بیٹھ کے کیا آسمان دیکھتا ہے

    ملا ہے حسن تو اس حسن کی حفاظت کر

    سنبھل کے چل تجھے سارا جہان دیکھتا ہے

    کنیز ہو کوئی یا کوئی شاہزادی ہو

    جو عشق کرتا ہے کب خاندان دیکھتا ہے

    گھٹائیں اٹھتی ہیں برسات ہونے لگتی ہے

    جب آنکھ بھر کے فلک کو کسان دیکھتا ہے

    یہی وہ شہر جو میرے لبوں سے بولتا تھا

    یہی وہ شہر جو میری زبان دیکھتا ہے

    میں جب مکان کے باہر قدم نکالتا ہوں

    عجب نگاہ سے مجھ کو مکان دیکھتا ہے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    شکیل اعظمی

    شکیل اعظمی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY