پتھر سے وصال مانگتی ہوں

فہمیدہ ریاض

پتھر سے وصال مانگتی ہوں

فہمیدہ ریاض

MORE BYفہمیدہ ریاض

    پتھر سے وصال مانگتی ہوں

    میں آدمیوں سے کٹ گئی ہوں

    شاید پاؤں سراغ الفت

    مٹھی میں خاک بھر رہی ہوں

    ہر لمس ہے جب تپش سے عاری

    کس آنچ سے یوں پگھل رہی ہوں

    وہ خواہش بوسہ بھی نہیں اب

    حیرت سے ہونٹ کاٹتی ہوں

    اک طفلک جستجو ہوں شاید

    میں اپنے بدن سے کھیلتی ہوں

    اب طبع کسی پہ کیوں ہو راغب

    انسانوں کو برت چکی ہوں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY