پیش نظر ہے نزع میں نقشہ نگار کا

میر شمس الدین فیض

پیش نظر ہے نزع میں نقشہ نگار کا

میر شمس الدین فیض

MORE BYمیر شمس الدین فیض

    پیش نظر ہے نزع میں نقشہ نگار کا

    جلوہ خزاں دکھاتی ہے مجھ کو بہار کا

    سرمے سے رتبہ کم نہیں اپنے غبار کا

    ہے سنگ طور سنگ ہماری مزار کا

    ہے بعد مرگ شوق ہمیں دید یار کا

    چلمن کا حال ہے کفن تار تار کا

    تیرہ اقامت اپنی ہو باغ جہاں میں کیا

    آواز الرحیل ہے نالہ ہزار کا

    ہے اپنے سوز دل کا دماغ آسمان پر

    پرتو ہے آفتاب دل داغدار کا

    اے جان پاک کر نہ تن و توش پر غرور

    ہے حال جسم پیرہن مستعار کا

    تیار خاک گور سے ہوتے ہیں جام مے

    بعد فنا بھی رنج ہے مجھ کو خمار کا

    مأخذ :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY