پھر خبر اس فصل میں یارو بہار آنے کی ہے

شیخ ظہور الدین حاتم

پھر خبر اس فصل میں یارو بہار آنے کی ہے

شیخ ظہور الدین حاتم

MORE BYشیخ ظہور الدین حاتم

    پھر خبر اس فصل میں یارو بہار آنے کی ہے

    اب بجز زنجیر کیا تدبیر دیوانے کی ہے

    خاک کر دیوے جلا کر پہلے پھر ٹسوئے بہائے

    شمع مجلس میں بڑی دل سوز پروانے کی ہے

    بھید زلفوں کا بیاں کرنے میں ہو جاتا ہے گنگ

    ورنہ کہنے کو جو پوچھو سو زباں شانے کی ہے

    شیخ اس کی چشم کے گوشے سے گوشے ہو کہیں

    اس طرف مت جاؤ ناداں راہ مے خانے کی ہے

    حوصلہ تنگی کرے ہے شہر کے کوچے ہیں تنگ

    اب ہوس دل میں ہمارے سیر ویرانے کی ہے

    چاہئے کیا بات کہتے ہو جہاں میں قتل عام

    دیر منہ سے اب تمہارے حکم فرمانے کی ہے

    جی میں آتا ہے کہ حاتمؔ آج اس کو چھیڑئیے

    مدتوں سے دل میں حسرت گالیاں کھانے کی ہے

    مآخذ:

    • کتاب : Diwan-e-Zadah (Pg. 310)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY