پھر تیری یاد دلاتے ہیں مجھے

یادگار حسین نشتر خیرابادی

پھر تیری یاد دلاتے ہیں مجھے

یادگار حسین نشتر خیرابادی

MORE BYیادگار حسین نشتر خیرابادی

    پھر تیری یاد دلاتے ہیں مجھے

    لوگ دانستہ ستاتے ہیں مجھے

    زلف بردوش نشیلی آنکھیں

    اے وہ لوٹے لیے جاتے ہیں مجھے

    میں نے یہ خواب نہ دیکھا ہو کہیں

    وہ محبت سے بلاتے ہیں مجھے

    ان کے اشکوں میں بھی اب تو نشترؔ

    دل کے ٹکڑے نظر آتے ہیں مجھے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY