پھر وہی میں ہوں وہی شہر بدر سناٹا

محسن نقوی

پھر وہی میں ہوں وہی شہر بدر سناٹا

محسن نقوی

MORE BYمحسن نقوی

    پھر وہی میں ہوں وہی شہر بدر سناٹا

    مجھ کو ڈس لے نہ کہیں خاک بسر سناٹا

    دشت ہستی میں شب غم کی سحر کرنے کو

    ہجر والوں نے لیا رخت سفر سناٹا

    کس سے پوچھوں کہ کہاں ہے مرا رونے والا

    اس طرف میں ہوں مرے گھر سے ادھر سناٹا

    تو صداؤں کے بھنور میں مجھے آواز تو دے

    تجھ کو دے گا مرے ہونے کی خبر سناٹا

    اس کو ہنگامۂ منزل کی خبر کیا دو گے

    جس نے پایا ہو سر راہ گزر سناٹا

    حاصل کنج قفس وہم بکف تنہائی

    رونق شام سفر تا بہ سحر سناٹا

    قسمت شاعر سیماب صفت دشت کی موت

    قیمت ریزۂ الماس ہنر سناٹا

    جان محسنؔ مری تقدیر میں کب لکھا ہے

    ڈوبتا چاند ترا قرب گجر سناٹا

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    پھر وہی میں ہوں وہی شہر بدر سناٹا نعمان شوق

    موضوعات:

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY