پوشیدہ دیکھتی ہے کسی کی نظر مجھے

وحشتؔ رضا علی کلکتوی

پوشیدہ دیکھتی ہے کسی کی نظر مجھے

وحشتؔ رضا علی کلکتوی

MORE BYوحشتؔ رضا علی کلکتوی

    پوشیدہ دیکھتی ہے کسی کی نظر مجھے

    دیکھ اے نگاہ شوق تو رسوا نہ کر مجھے

    مقصد سے بے نیاز رہا ذوق جستجو

    میں بے خبر ہوا جو ہوئی کچھ خبر مجھے

    میں شب کی بزم عیش کا ماتم نشیں ہوں آپ

    رو رو کے کیوں رلاتی ہے شمع سحر مجھے

    حیرت نے میری آئینہ ان کو بنا دیا

    کیا دیکھتے کہ رہ گئے وہ دیکھ کر مجھے

    قربان جاؤں چھوڑ تکلف کی گفتگو

    کہہ کر پکار وحشتؔ شوریدہ سر مجھے

    RECITATIONS

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    نعمان شوق

    پوشیدہ دیکھتی ہے کسی کی نظر مجھے نعمان شوق

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY