پرانی چوٹ میں کیسے دکھاؤں

تری پراری

پرانی چوٹ میں کیسے دکھاؤں

تری پراری

MORE BYتری پراری

    پرانی چوٹ میں کیسے دکھاؤں

    اٹھے جب درد تو پھر مسکراؤں

    بہت سے لوگ مجھ میں رو رہے ہیں

    اماں کس کس کو یاں پر چپ کراؤں

    تمہاری یاد جو اب مر چکی ہے

    میں اس دفن کر دوں یا جلاؤں

    بہت جی چاہتا ہے کچھ دنوں سے

    میں اپنے آپ سے ہی روٹھ جاؤں

    مری خاطر دعا کرنا مرے دوست

    کسی دن خود کو سچ میں بھول جاؤں

    گزارش ہے نہ مجھ کو یاد آئے

    تمنا ہے نہ تجھ کو یاد آؤں

    تمہارا نام پھر ساحل پہ لکھوں

    لہر سے آنے پہلے خود مٹاؤں

    بناؤں گا میں خود کو جی کیا تو

    فقط بگڑی ہوئی میں کیوں بناؤں

    میں بھیتر سے بہت ٹوٹا ہوا ہوں

    کسی سے حال اپنا کیا چھپاؤں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY