Font by Mehr Nastaliq Web

aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

قلم ہو جائے سر پروا نہ کرنا

عاجز ماتوی

قلم ہو جائے سر پروا نہ کرنا

عاجز ماتوی

MORE BYعاجز ماتوی

    قلم ہو جائے سر پروا نہ کرنا

    امیر شہر کو سجدہ نہ کرنا

    کیا ترک تعلق تم نے بہتر

    مگر اس کا کہیں چرچا نہ کرنا

    مجھے تربت میں از حد عافیت ہے

    مسیحا اب مجھے زندہ نہ کرنا

    بڑھاتا ہے کسل دورئ منزل

    خیال وسعت صحرا نہ کرنا

    کٹھن ہو جائے گی منزل شناسی

    کبھی مسخ ان کا نقش پا نہ کرنا

    محبت میں یہ ہے دستور دنیا

    ذرا سی بات کو افشا نہ کرنا

    یہ ہے اب اک طریقہ گفتگو کا

    کسی کے سامنے لب وا نہ کرنا

    تمہارے منہ پہ وہ سچ بول دے گا

    مقابل اپنے آئینہ نہ کرنا

    مناسب ہے کہ عاجزؔ توبہ کر لو

    نہ تضحیک مے و میخانہ کرنا

    مأخذ :
    • کتاب : Mahbis-e-Gham (Pg. 58)
    • Author : Aajiz Matavi
    • مطبع : Aajiz Matavi (2001)
    • اشاعت : 2001

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے