قلب و جگر کے داغ فروزاں کئے ہوئے

رضی رضی الدین

قلب و جگر کے داغ فروزاں کئے ہوئے

رضی رضی الدین

MORE BYرضی رضی الدین

    قلب و جگر کے داغ فروزاں کئے ہوئے

    ہیں ہم بھی اہتمام بہاراں کئے ہوئے

    دیوانۂ خرد ہو کہ مجنون عشق ہو

    رہنا ہے اس کو چاک گریباں کئے ہوئے

    پردے میں شب کے ہم نے چھپائے ہیں دل کے زخم

    اک تیرگی ہے درد کا درماں کئے ہوئے

    دل کا عجیب حال ہے بے اختیار ہے

    یادوں کی میزبانی کا ساماں کئے ہوئے

    راز حیات کس کو بتائیں کہ ہر کوئی

    ہے زندگی کو موت کا عنواں کئے ہوئے

    بھٹکا رہا ہے دل کو کسی شخص کا خیال

    دل کو اسی کی یاد پریشاں کئے ہوئے

    کیا ہو رہا ہے دل پہ اثر ان کا کیا کہیں

    جلوہ جو ہیں نگاہ کو حیراں کئے ہوئے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے