قرار دل کو سدا جس کے نام سے آیا

جمال احسانی

قرار دل کو سدا جس کے نام سے آیا

جمال احسانی

MORE BY جمال احسانی

    قرار دل کو سدا جس کے نام سے آیا

    وہ آیا بھی تو کسی اور کام سے آیا

    کسی نے پوچھا نہیں لوٹتے ہوئے مجھ سے

    میں آج کیسے بھلا گھر میں شام سے آیا

    ہم ایسے بے ہنروں میں ہے جو سلیقۂ زیست

    ترے دیار میں پل بھر قیام سے آیا

    جو آسماں کی بلندی کو چھونے والا تھا

    وہی منارہ زمیں پر دھڑام سے آیا

    میں خالی ہاتھ ہی جا پہنچا اس کی محفل میں

    مرا رقیب بڑے انتظام سے آیا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites