قربتوں میں بھی جدائی کے زمانے مانگے

احمد فراز

قربتوں میں بھی جدائی کے زمانے مانگے

احمد فراز

MORE BYاحمد فراز

    قربتوں میں بھی جدائی کے زمانے مانگے

    دل وہ بے مہر کہ رونے کے بہانے مانگے

    ہم نہ ہوتے تو کسی اور کے چرچے ہوتے

    خلقت شہر تو کہنے کو فسانے مانگے

    یہی دل تھا کہ ترستا تھا مراسم کے لیے

    اب یہی ترک تعلق کے بہانے مانگے

    اپنا یہ حال کہ جی ہار چکے لٹ بھی چکے

    اور محبت وہی انداز پرانے مانگے

    زندگی ہم ترے داغوں سے رہے شرمندہ

    اور تو ہے کہ سدا آئینہ خانے مانگے

    دل کسی حال پہ قانع ہی نہیں جان فرازؔ

    مل گئے تم بھی تو کیا اور نہ جانے مانگے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    مہران امروہی

    مہران امروہی

    فیض احمد فیض

    فیض احمد فیض

    احمد فراز

    احمد فراز

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY