قوت جور جائے چھن تجھ سے جو تو جفا کرے

منّان بجنوری

قوت جور جائے چھن تجھ سے جو تو جفا کرے

منّان بجنوری

MORE BYمنّان بجنوری

    قوت جور جائے چھن تجھ سے جو تو جفا کرے

    تو بھی ہو بے بس ایک دن ایسا بھی ہو خدا کرے

    چھیڑے کوئی جو غم کی بات تیرا بھی جائے دل پہ ہاتھ

    سینے میں دھڑکنوں کے ساتھ تیر سا کچھ چبھا کرے

    تیرے بھی ہونٹ جائیں سل تو بھی کبھی ہو منفعل

    رخ پہ برس کے ابر دل قصۂ دل کہا کرے

    آتش شوق ہو نہ کم بڑھتی ہی جائے دم بہ دم

    لذت دلبری سے غم تجھ کو بھی آشنا کرے

    اول جلول بک گیا تجھ کو ترا یہ دل‌ جلا

    رب سے مگر ہے یہ دعا کچھ نہ ترا برا کرے

    وقت کی آئے دن کی راڑ زیست کی دم بہ دم لتاڑ

    اس پہ غموں کی چھیڑ چھاڑ کوئی نہ کیوں چڑا کرے

    وصل کی بر نہ آئے آس کر کے ہزار التماس

    ہجر میں ہو جو محو یاس وہ یہ غزل پڑھا کرے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے