راس آیا نہیں ہم کو ترا آتے رہنا

دویا جین

راس آیا نہیں ہم کو ترا آتے رہنا

دویا جین

MORE BYدویا جین

    راس آیا نہیں ہم کو ترا آتے رہنا

    یوں ترا برسوں تلک وعدہ نبھاتے رہنا

    تو نے یہ جانا نہ آداب محبت کیا ہے

    ہر ملاقات پہ ملنے ترا آتے رہنا

    رائیگاں ہو گیا وہ گانا ترا راگ بسنت

    موسم خار میں پھولوں کو اگاتے رہنا

    اک سدا تیری بھی شامل تھی ہجوم طفلاں

    ہر سحر چھجے پہ مجھ کو بھی بلاتے رہنا

    جانتا تو نہیں کانٹے تو مرے دل میں چبھے

    پھول تیرا مری راہوں میں بچھاتے رہنا

    ہے یہ بے قفل قفس پر وہ پرندہ نہ اڑا

    قصۂ عشق ترا اس کو سناتے رہنا

    تیرے جیسا بھی ہے اک شخص زمانے بھر میں

    کب تلک مجنوں اور رانجھوں کو گناتے رہنا

    راکھ جب میں نے کریدی تو کہے چنگاری

    کام تم جیسوں کا ہے دنیا جلاتے رہنا

    روبرو آئنے کے روز میں آؤں کیسے

    کتنا مشکل ہے نظر خود سے ملاتے رہنا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے