رات کی دھڑکن جب تک جاری رہتی ہے

راحتؔ اندوری

رات کی دھڑکن جب تک جاری رہتی ہے

راحتؔ اندوری

MORE BYراحتؔ اندوری

    رات کی دھڑکن جب تک جاری رہتی ہے

    سوتے نہیں ہم ذمہ داری رہتی ہے

    جب سے تو نے ہلکی ہلکی باتیں کیں

    یار طبیعت بھاری بھاری رہتی ہے

    پاؤں کمر تک دھنس جاتے ہیں دھرتی میں

    ہاتھ پسارے جب خودداری رہتی ہے

    وہ منزل پر اکثر دیر سے پہنچے ہیں

    جن لوگوں کے پاس سواری رہتی ہے

    چھت سے اس کی دھوپ کے نیزے آتے ہیں

    جب آنگن میں چھاؤں ہماری رہتی ہے

    گھر کے باہر ڈھونڈھتا رہتا ہوں دنیا

    گھر کے اندر دنیا داری رہتی ہے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    راحتؔ اندوری

    راحتؔ اندوری

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY