رات تاروں سے جب سنورتی ہے

شوکت پردیسی

رات تاروں سے جب سنورتی ہے

شوکت پردیسی

MORE BYشوکت پردیسی

    INTERESTING FACT

    نے یہ غزل طلعت محمود کی آواز میں ریکارڈ کی HMV

    رات تاروں سے جب سنورتی ہے

    اک نئی زندگی ابھرتی ہے

    موج غم سے نہ ہو کوئی مایوس

    زندگی ڈوب کر ابھرتی ہے

    آج دل میں پھر آرزوئے دید

    وقت کا انتظار کرتی ہے

    دل جلے یا دیا جلے شوکتؔ

    رات افسانہ کہہ گزرتی ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY