رنجش ہی سہی دل ہی دکھانے کے لیے آ

احمد فراز

رنجش ہی سہی دل ہی دکھانے کے لیے آ

احمد فراز

MORE BY احمد فراز

    رنجش ہی سہی دل ہی دکھانے کے لیے آ

    آ پھر سے مجھے چھوڑ کے جانے کے لیے آ

    even if you are annoyed come just to give me pain

    come even if you have to then leave me yet again

    کچھ تو مرے پندار محبت کا بھرم رکھ

    تو بھی تو کبھی مجھ کو منانے کے لیے آ

    the notion of my love's self-pride please do pacify

    you should surely come one day and try to mollify

    پہلے سے مراسم نہ سہی پھر بھی کبھی تو

    رسم و رہ دنیا ہی نبھانے کے لیے آ

    even tho no longer close we are as used to be

    come even if it's purely for sake of formality

    کس کس کو بتائیں گے جدائی کا سبب ہم

    تو مجھ سے خفا ہے تو زمانے کے لیے آ

    the reason for our parting to whom should I relate

    if cross with methen come and to the world narrate

    اک عمر سے ہوں لذت گریہ سے بھی محروم

    اے راحت جاں مجھ کو رلانے کے لیے آ

    a lifetime have I missed the joy of tearful ecstasy

    life's comfort thus to make me cry, you should come to me

    اب تک دل خوش فہم کو تجھ سے ہیں امیدیں

    یہ آخری شمعیں بھی بجھانے کے لیے آ

    my heart is optimistic yet, its hopes are still alive

    come to snuff it out, let not this final flame survive

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    نامعلوم

    نامعلوم

    مہدی حسن

    مہدی حسن

    آشا بھوسلے

    آشا بھوسلے

    رنا لیلیٰ

    رنا لیلیٰ

    فریدہ خانم

    فریدہ خانم

    رفاقت علی خان

    رفاقت علی خان

    حبیب ولی محمد

    حبیب ولی محمد

    RECITATIONS

    فہد حسین

    فہد حسین

    مہدی حسن

    مہدی حسن

    احمد فراز

    احمد فراز

    فہد حسین

    رنجش ہی سہی دل ہی دکھانے کے لیے آ فہد حسین

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites