رقیبوں کا مجھ سے گلا ہو رہا ہے

بیخود بدایونی

رقیبوں کا مجھ سے گلا ہو رہا ہے

بیخود بدایونی

MORE BYبیخود بدایونی

    رقیبوں کا مجھ سے گلا ہو رہا ہے

    یہ کیا کر رہے ہو یہ کیا ہو رہا ہے

    دعا کو نہیں راہ ملتی فلک کی

    کچھ ایسا ہجوم بلا ہو رہا ہے

    وہ جو کر رہے ہیں بجا کر رہے ہیں

    یہ جو ہو رہا ہے بجا ہو رہا ہے

    وہ نا آشنا بے وفا میری ضد سے

    زمانے کا اب آشنا ہو رہا ہے

    چھپائے ہوئے دل کو پھرتے ہیں بیخودؔ

    کہ خواہاں کوئی دل ربا ہوا ہے

    مأخذ :
    • کتاب : Intekhab-e-Sukhan(Jild-2) (Pg. 190)
    • Author : Hasrat Mohani
    • مطبع : uttar pradesh urdu academy (1983)
    • اشاعت : 1983

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY