رو پڑا ناگہاں مسکرانے کے بعد

برقی اعظمی

رو پڑا ناگہاں مسکرانے کے بعد

برقی اعظمی

MORE BYبرقی اعظمی

    رو پڑا ناگہاں مسکرانے کے بعد

    یاد آئی بہت اس کی جانے کے بعد

    میری آنکھیں کھلی کی کھلی رہ گئیں

    وہ نظر آیا جب اک زمانے کے بعد

    روح پرور تھا اس کا یہ طرز عمل

    روٹھ جانا دوبارہ منانے کے بعد

    دل کو دل سے ملاتی ہے یہ دل لگی

    اس کا ہونا پشیماں ستانے کے بعد

    تلخ و شیریں ہے روداد دل بستگی

    منکشف یہ ہوا آزمانے کے بعد

    شخصیت کا مری بن گیا ایک جز

    میرے قلب و جگر میں سمانے کے بعد

    ہے یہ برقیؔ حسینوں کی فطرت کا جز

    وعدہ کر کے نہ آنا بلانے کے بعد

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY