روز اب آگ پہ چلنا ہوگا

زینت شیخ

روز اب آگ پہ چلنا ہوگا

زینت شیخ

MORE BYزینت شیخ

    روز اب آگ پہ چلنا ہوگا

    اسی ماحول میں پلنا ہوگا

    راستہ تم کو بدلنا ہوگا

    ورنہ کانٹوں پہ ہی چلنا ہوگا

    کچھ دکھائی نہیں دیتا ہے یہاں

    دشت ظلمت سے نکلنا ہوگا

    ہم اگر حوصلہ بردار رہے

    چڑھتے سورج کو بھی ڈھلنا ہوگا

    دھندھ میں گم ہوا منزل کا سراغ

    اب ہمیں ہاتھ ہی ملنا ہوگا

    سیر گلشن کی اجازت نہیں اب

    گھر میں ہی تم کو ٹہلنا ہوگا

    اس کی فرقت میں تمہیں اب زینتؔ

    جھوٹے وعدوں سے بہلنا ہوگا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے