سائے چمک رہے تھے سیاست کی بات تھی

حمایت علی شاعر

سائے چمک رہے تھے سیاست کی بات تھی

حمایت علی شاعر

MORE BYحمایت علی شاعر

    سائے چمک رہے تھے سیاست کی بات تھی

    آنکھیں کھلیں تو صبح کے پردے میں رات تھی

    میں تو سمجھ رہا تھا کہ مجھ پر ہے مہرباں

    دیوار کی یہ چھاؤں تو سورج کے ساتھ تھی

    کس درجہ ہولناک ہے یارو شعور ذات

    کتنی حسین پہلے یہی کائنات تھی

    تیری جفا تو مورد الزام تھی نہ ہے

    میری وفا بھی کوشش‌ تکمیل ذات تھی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے