ساقی مجھے خمار ستائے ہے لا شراب

شیخ ظہور الدین حاتم

ساقی مجھے خمار ستائے ہے لا شراب

شیخ ظہور الدین حاتم

MORE BY شیخ ظہور الدین حاتم

    ساقی مجھے خمار ستائے ہے لا شراب

    مرتا ہوں تشنگی سے اے ظالم پلا شراب

    مدت سے آرزو ہے خدا وہ گھڑی کرے

    ہم تم پئیں جو مل کے کہیں ایک جا شراب

    مشرب میں تو درست خراباتیوں کے ہے

    مذہب میں زاہدوں کے نہیں گر روا شراب

    ساقی کے تئیں بلاؤ اٹھا دو طبیب کو

    مستوں کے ہے مرض کی جہاں میں دوا شراب

    بے روئے یار او مطرب و ابرو بہار و باغ

    حاتمؔ کے تئیں کبھی نہ پلائے خدا شراب

    مآخذ:

    • Book: Diwan Zadah (Pg. 146)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Added to your favorites

    Removed from your favorites