سب ہے زیر بحث جو ظاہر ہے یا پوشیدہ ہے

محمد اعظم

سب ہے زیر بحث جو ظاہر ہے یا پوشیدہ ہے

محمد اعظم

MORE BYمحمد اعظم

    سب ہے زیر بحث جو ظاہر ہے یا پوشیدہ ہے

    اور نظر سے اپنی پردہ آنکھ کا بوسیدہ ہے

    جب ملے طومار آگاہی سے فرصت دیکھنا

    کن تہوں میں رمز عقل نارسا پوشیدہ ہے

    کون سا آنسو ہو مقبول بنا گوش قبول

    کس صدف کو کیا خبر ہے اس میں کیا پوشیدہ ہے

    بے اماں اس درجہ وحشت خیز ہے سعئ جنوں

    یک جہاں صحرا ہمارے زیر پا پوشیدہ ہے

    ہم مسافر ایسی منزل کے ہوئے جس کے لئے

    راستہ ظاہر ہے لیکن فاصلہ پوشیدہ ہے

    صرصر ہستی میں زندہ ہے ابھی تک ایک لو

    شعلۂ دل زیر دامان ہوا پوشیدہ ہے

    ایک آندھی خاک تک میری اڑا کر لے گئی

    میں کہاں ہوں صاحبو یہ ماجرا پوشیدہ ہے

    ویڈیو
    This video is playing from YouTube

    Videos
    This video is playing from YouTube

    محمد اعظم

    محمد اعظم

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY