سب کے چہروں پہ جب خوشی ہوگی

دنیش کمار

سب کے چہروں پہ جب خوشی ہوگی

دنیش کمار

MORE BYدنیش کمار

    سب کے چہروں پہ جب خوشی ہوگی

    کیا دنیشؔ ایسی صبح بھی ہوگی

    لوگ نکلے ہیں جو یہ شمع لیے

    نربھیا پھر کوئی لٹی ہوگی

    سرد موسم میں بے گھروں کی دشا

    بے بسی خود بھی رو رہی ہوگی

    کیا کبھی انقلاب آئے گا

    ان اندھیروں میں روشنی ہوگی

    سب کے ہونٹوں پہ یہ سوال ہے اب

    کب سیاست کو ہتھکڑی ہوگی

    ابر برسے گا ٹوٹ کر جس دن

    دور دھرتی کی تشنگی ہوگی

    اٹھ کے ظالم کو دے جواب دنیشؔ

    ظلم سہنا تو بزدلی ہوگی

    مآخذ :
    • کتاب : Word File Mail By Salim Saleem

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY