aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

سب اکھڑ گئیں میخیں جب لگائیں تصویریں

امیر نہٹوری

سب اکھڑ گئیں میخیں جب لگائیں تصویریں

امیر نہٹوری

MORE BYامیر نہٹوری

    سب اکھڑ گئیں میخیں جب لگائیں تصویریں

    چیختی ہیں دیواریں کیوں سجائیں تصویریں

    تیز ہو گئیں یارو اور دھڑکنیں دل کی

    کپکپاتے ہونٹوں سے جب لگائیں تصویریں

    آئنے کی کرچوں کو دیکھ دیکھ روتے ہیں

    اک ہوا کے جھونکے نے کیا گرائیں تصویریں

    تیری میری چاہت پر کتنا طنز کرتے تھے

    جل گئے جہاں والے جب دکھائیں تصویریں

    ناگہاں امنڈ آئے میری آنکھ میں آنسو

    آج کچھ لفافوں سے ہاتھ آئیں تصویریں

    جیسے کوئی دھن والا اپنا دھن چھپاتا ہو

    ہم نے ساری دنیا سے یوں چھپائیں تصویریں

    اے امیرؔ ہم جن کو دیکھ دیکھ جیتے تھے

    نفرتوں کے شعلوں نے وہ جلائیں تصویریں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے