صبر کریں گے جب تک عشق نہیں ہوتا

معین شاداب

صبر کریں گے جب تک عشق نہیں ہوتا

معین شاداب

MORE BY معین شاداب

    صبر کریں گے جب تک عشق نہیں ہوتا

    دیکھیں اس کو کب تک عشق نہیں ہوتا

    شرکت کچھ تو لازم ہے مطلوب کی بھی

    طالب کے مطلب تک عشق نہیں ہوتا

    اس کے بعد اماوس بھی تو پڑتی ہے

    پورے چاند کی شب تک عشق نہیں ہوتا

    دل دریا میں غوطے کھانے پڑتے ہیں

    دیکھو لب سے لب تک عشق نہیں ہوتا

    ہم تو جانے کب کے جل کر خاک ہوئے

    لیکن ان کو اب تک عشق نہیں ہوتا

    چہرے کی ساری رونق اڑ جائے گی

    ہنستے رہئے جب تک عشق نہیں ہوتا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY