صفحۂ زیست جب پڑھوں گا تمہیں

احمد عطا

صفحۂ زیست جب پڑھوں گا تمہیں

احمد عطا

MORE BYاحمد عطا

    صفحۂ زیست جب پڑھوں گا تمہیں

    دیر تک چومتا رہوں گا تمہیں

    تم بھلے دیکھتے رہو سب کو

    میں چھپا کر کہیں رکھوں گا تمہیں

    تم بنے ہو بنے رہو خوشبو

    میں کسی روز لے اڑوں گا تمہیں

    راگ ہو، دل کی دھڑکنوں کا راگ

    سامنے بیٹھ کر سنوں گا تمہیں

    دیکھنا دیکھتے ہوئے مجھ کو

    کس طرح آنکھ میں بھروں گا تمہیں

    جاؤ چھپتے پھرو گریز کرو

    ایک دن میں بھی دیکھ لوں گا تمہیں

    تم بہت دور جا چکے ہو گے

    میں کہاں ڈھونڈھتا پھروں گا تمہیں

    اک دن احمد عطاؔ بھی خواب ہوا

    کہہ گیا خواب میں ملوں گا تمہیں

    موضوعات :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY