aaj ik aur baras biit gayā us ke baġhair

jis ke hote hue hote the zamāne mere

رد کریں ڈاؤن لوڈ شعر

سجن آویں تو پردے سے نکل کر بھار بیٹھوں گی

ہاشمی بیجاپوری

سجن آویں تو پردے سے نکل کر بھار بیٹھوں گی

ہاشمی بیجاپوری

MORE BYہاشمی بیجاپوری

    سجن آویں تو پردے سے نکل کر بھار بیٹھوں گی

    بہانہ کر کے موتیاں کا پرونے ہار بیٹھوں گی

    اونو یہاں آؤ کہیں گے تو کہوں گی کام کرتی ہوں

    اٹھلتی ہور مٹھلتی چپ گھڑی دو چار بیٹھوں گی

    نزک میں ان کے جانے کو خوشی سوں شاد ہوں دل میں

    ولے لوگوں میں دکھلانے کوں ہو بیزار بیٹھوں گی

    بلایاں جیو کا لے میں پڑوں‌ گی پاؤں میں دل سوں

    ولے ظاہر میں دکھلانے کوں ہو اغیار بیٹھوں گی

    کروں گی ظاہرا چپ میں غصہ ہور مان‌ ہٹ لیکن

    سریجن پر تے جیو اپنا یہ جیو میں وار بیٹھوں گی

    کنے کو چپ کتی ہوں میں ولے میں دل میں گھٹکی ہوں

    نزک ہو ہاشمیؔ سوں مل کر آٹھوں پار بیٹھوں گی

    مأخذ:

    Ghazal Usne Chhedi (Part-1) (Pg. 41)

    • مصنف: Farhat Ehsas
      • اشاعت: 2016
      • ناشر: Rekhta Books
      • سن اشاعت: 2016

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 8-9-10 December 2023 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate - New Delhi

    GET YOUR PASS
    بولیے