شب دراز تجھے کچھ خبر گئی کہ نہیں

رضی رضی الدین

شب دراز تجھے کچھ خبر گئی کہ نہیں

رضی رضی الدین

MORE BYرضی رضی الدین

    شب دراز تجھے کچھ خبر گئی کہ نہیں

    سحر قریب سے چھو کر گزر گئی کہ نہیں

    چمن میں جاؤ ذرا اور پھر بتاؤ ہمیں

    گلوں کے چہرے سے زردی اتر گئی کہ نہیں

    تمہارے شہر میں کیوں آج ہو کا عالم ہے

    صبا ادھر سے گزر کر ادھر گئی کہ نہیں

    پتا کرو مرے معشوق کی گلی جا کر

    بہار بھی وہیں جا کر ٹھہر گئی کہ نہیں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے