شہر طرب میں آج عجب حادثہ ہوا

حامد سروش

شہر طرب میں آج عجب حادثہ ہوا

حامد سروش

MORE BYحامد سروش

    شہر طرب میں آج عجب حادثہ ہوا

    ہنستے میں اس کی آنکھ سے آنسو چھلک پڑا

    حیران ہو کے سوچ رہا تھا کہ کیا کہوں

    اک شخص مجھ سے میرا پتہ پوچھنے لگا

    ہالہ نہیں ہے آتش فرقت کی آنچ ہے

    تارا نہ تھا تو چاند کا پہلو سلگ اٹھا

    اب یاد بھی نہیں کہ شکایت تھی ان سے کیا

    بس اک خیال ذہن کے گوشے میں رہ گیا

    کتنے ہی تارے ٹوٹ کے دامن میں آ گرے

    جب چودھویں کا چاند گھٹاؤں میں جا چھپا

    باد خزاں چمن سے شبستاں تک آ گئی

    تکیے کا سرخ پھول بھی مرجھا کے رہ گیا

    سوچا تھا اس سے دور کہیں جا بسیں گے ہم

    لیکن سروشؔ ہم سے پشاور نہ چھٹ سکا

    مأخذ :
    • کتاب : auraq salnama magazines (Pg. 528)
    • Author : Wazir Agha,Arif Abdul Mateen
    • مطبع : Daftar Mahnama Auraq Lahore (1967)
    • اشاعت : 1967

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY