شمع امید گر نہیں ہوتی

محفوظ اثر

شمع امید گر نہیں ہوتی

محفوظ اثر

MORE BYمحفوظ اثر

    شمع امید گر نہیں ہوتی

    شام غم کی سحر نہیں ہوتی

    ہائے نا قدریٔ جہاں افسوس

    قدر اہل ہنر نہیں ہوتی

    بات کرتے ہیں لوگ برسوں کی

    اور پل کی خبر نہیں ہوتی

    ایک ایسا بھی ہے سفر کہ جہاں

    زندگی ہم سفر نہیں ہوتی

    حق پسندی مزاج ہو جس کا

    مفلسی اس کے گھر نہیں ہوتی

    زندگی کا نہ اعتبار کرو

    زندگی معتبر نہیں ہوتی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY