شکوہ ہائے غم جہاں سے بچیں

عبدالسلام عاصم

شکوہ ہائے غم جہاں سے بچیں

عبدالسلام عاصم

MORE BYعبدالسلام عاصم

    شکوہ ہائے غم جہاں سے بچیں

    آ کہ ہم سعئ رائیگاں سے بچیں

    آ کہ سمجھیں زمیں کی خوش سببی

    بے سبب خوف آسماں سے بچیں

    چھین لے جو یقین کی توفیق

    لازماً ایسے ہر گماں سے بچیں

    سال بھر دل لگائیں پڑھنے میں

    رات دن فکر امتحاں سے بچیں

    جو بلا تبصرہ پڑھی جائے

    عشق کی ایسی داستاں سے بچیں

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY