سینہ خوں سے بھرا ہوا میرا

اختر انصاری

سینہ خوں سے بھرا ہوا میرا

اختر انصاری

MORE BY اختر انصاری

    سینہ خوں سے بھرا ہوا میرا

    اف یہ بد مست مے کدہ میرا

    نا رسائی پہ ناز ہے جس کو

    ہائے وہ شوق نا رسا میرا

    دل غم دیدہ پر خدا کی مار

    سینہ آہوں سے چھل گیا میرا

    یاد کے تند و تیز جھونکے سے

    آج ہر داغ جل اٹھا میرا

    یاد ماضی عذاب ہے یا رب

    چھین لے مجھ سے حافظہ میرا

    منت چرخ سے بری ہوں میں

    نہ ہوا جیتے جی بھلا میرا

    ہے بڑا شغل زندگی اخترؔ

    پوچھتے کیا ہو مشغلہ میرا

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY