صرف میرے لیے نہیں رہنا

اسلم کولسری

صرف میرے لیے نہیں رہنا

اسلم کولسری

MORE BYاسلم کولسری

    صرف میرے لیے نہیں رہنا

    تم مرے بعد بھی حسیں رہنا

    پیڑ کی طرح جس جگہ پھوٹا

    عمر بھر ہے مجھے وہیں رہنا

    مشغلہ ہے شریف لوگوں کا

    صورت مار آستیں رہنا

    دلی اجڑی اداس بستی میں

    چاہتے تھے کئی مکیں رہنا

    مر نہ جائے تمہاری پھلواری

    قریۂ زخم کے قریں رہنا

    مسکراتا ہوں عادتاً اسلمؔ

    کون سمجھے مرا غمیں رہنا

    مأخذ :
    • کتاب : Range-e-Gazal (Pg. 127)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے