سنو گے تم بھی مری داستاں کبھی نہ کبھی

عزیز بدایونی

سنو گے تم بھی مری داستاں کبھی نہ کبھی

عزیز بدایونی

MORE BY عزیز بدایونی

    سنو گے تم بھی مری داستاں کبھی نہ کبھی

    اثر دکھائے گا درد نہاں کبھی نہ کبھی

    کبھی تو آتش نمرود سرد بھی ہوگی

    قرار پائے گا قلب تپاں کبھی نہ کبھی

    یہ آج گردش شام و سحر بتاتی ہے

    نظر بچائے گا خود آسماں کبھی نہ کبھی

    کبھی تو گوہر نایاب ہاتھ آئے گا

    ملے گا روح خودی کا نشاں کبھی نہ کبھی

    جمود سحر تمنا میں رہ نہیں سکتا

    فروغ پائے گا عزم جواں کبھی نہ کبھی

    اذاں بلال کی گونجی ہے ریگزاروں میں

    سنے گا دل کی صدا یہ جہاں کبھی نہ کبھی

    عزیزؔ تیری محبت بھی رنگ لائے گی

    تمام ہوگا غم بے کراں کبھی نہ کبھی

    مآخذ:

    • کتاب : Aabshaar (Pg. 194)
    • Author : Aziz Badayuni
    • مطبع : Aziz Badayuni (Begum Aziz Azam (1981)
    • اشاعت : 1981

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY