سنتے ہیں جو ہم دشت میں پانی کی کہانی

ذوالفقار عادل

سنتے ہیں جو ہم دشت میں پانی کی کہانی

ذوالفقار عادل

MORE BYذوالفقار عادل

    سنتے ہیں جو ہم دشت میں پانی کی کہانی

    آزار کا آزار کہانی کی کہانی

    دریا تو کہیں بعد میں دریافت ہوئے ہیں

    آغاز ہوئی دل سے روانی کی کہانی

    سنتا ہو اگر کوئی تو عادلؔ وہ در و بام

    کہتے ہیں مری نقل مکانی کی کہانی

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY