طے کیا اس طرح سفر تنہا

حرمت الااکرام

طے کیا اس طرح سفر تنہا

حرمت الااکرام

MORE BYحرمت الااکرام

    طے کیا اس طرح سفر تنہا

    ایک ہم ایک رہ گزر تنہا

    کون ہوتا رفیق تیرہ شبی

    دل جلایا ہے تا سحر تنہا

    خیریت پوچھنے کو آئی ہے

    زندگی مجھ کو دیکھ کر تنہا

    آفت جاں ہے وضع ہم سفری

    وقت کی راہ سے گزر تنہا

    دھڑکنوں کا بھی ہے عجب انداز

    دل کی وادی ہے کس قدر تنہا

    نہ ملا درد آشنا کوئی

    کٹ گیا درد کا سفر تنہا

    دشت میں اپنی ہی تجلی کے

    جھلملایا کیا قمر تنہا

    ساعتیں دیتی ہی رہیں آواز

    زندگی چل پڑی کدھر تنہا

    قتل گاہ وفا ملی خالی

    حرمتؔ آئے ہمیں نظر تنہا

    مأخذ :

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY

    Jashn-e-Rekhta | 2-3-4 December 2022 - Major Dhyan Chand National Stadium, Near India Gate, New Delhi

    GET YOUR FREE PASS
    بولیے