تخاطب ہے تجھ سے خیال اور کا ہے

حمایت علی شاعر

تخاطب ہے تجھ سے خیال اور کا ہے

حمایت علی شاعر

MORE BYحمایت علی شاعر

    تخاطب ہے تجھ سے خیال اور کا ہے

    یہ نکتہ وفا میں بڑے غور کا ہے

    وہ خلوت میں کچھ اور جلوت میں کچھ ہے

    کرم اس کا مجھ پر عجب طور کا ہے

    مرا چہرہ بھی میرا چہرہ نہیں ہے

    یہ احسان مجھ پر مرے دور کا ہے

    یہ نفرت محبت کا رد عمل ہے

    کہ مجھ سے تقاضا ترے جور کا ہے

    نئے دور کی ابتدا کا ہے ضامن

    کہ دل آئنہ گوشۂ ثور کا ہے

    کراچی میں بھی معتبر ہو رہا ہے

    سخن میں جو انداز لاہور کا ہے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY
    بولیے