تضاد جذبات میں یہ نازک مقام آیا تو کیا کرو گے

قابل اجمیری

تضاد جذبات میں یہ نازک مقام آیا تو کیا کرو گے

قابل اجمیری

MORE BYقابل اجمیری

    تضاد جذبات میں یہ نازک مقام آیا تو کیا کرو گے

    میں رو رہا ہوں تم ہنس رہے ہو میں مسکرایا تو کیا کرو گے

    مجھے تو اس درجہ وقت رخصت سکوں کی تلقین کر رہے ہو

    مگر کچھ اپنے لیے بھی سوچا میں یاد آیا تو کیا کرو گے

    ابھی تو تنقید ہو رہی ہے مرے مذاق جنوں پہ لیکن

    تمہاری زلفوں کی برہمی کا سوال آیا تو کیا کرو گے

    تمہارے جلووں کی روشنی میں نظر کی حیرانیاں مسلم

    مگر کسی نے نظر کے بدلے جو دل آزمایا تو کیا کرو گے

    اتر تو سکتے ہو یار لیکن مآل پر بھی نگاہ کر لو

    خدا ناکردہ سکون ساحل نہ راس آیا تو کیا کرو گے

    کچھ اپنے دل پر بھی زخم کھاؤ مرے لہو کی بہار کب تک

    مجھے سہارا بنانے والو میں لڑکھڑایا تو کیا کرو گے

    ابھی تو دامن چھڑا رہے ہو بگڑ کے قابلؔ سے جا رہے ہو

    مگر کبھی دل کی دھڑکنوں میں شریک پایا تو کیا کرو گے

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY