تیرے الطاف کا لطف اٹھاتے رہے

یشپال گپتا

تیرے الطاف کا لطف اٹھاتے رہے

یشپال گپتا

MORE BYیشپال گپتا

    تیرے الطاف کا لطف اٹھاتے رہے

    نور برسا کیا ہم نہاتے رہے

    کون تھا وہ خدایا خدا کا جمال

    من ہی من میں پہیلی بجھاتے رہے

    یہ سمجھ کر فقیری ہی میں ہے خدا

    گن ہمیشہ فقیروں کے گاتے رہے

    راز حق آشنا کا کھلا جب کبھی

    بادشہ تک حضوری میں آتے رہے

    ہم نے صحرا میں تنہا جلایا دیا

    پھر سدا آندھیوں سے بچاتے رہے

    صبر کی جستجو میں پھرے در بدر

    یشؔ گداگر سے یہ فیض پاتے رہے

    مآخذ :
    • کتاب : Shora-e-London (Pg. 178)
    • Author : Jauhar Zahiri
    • مطبع : Books From India (U.K) Ltd. 45, Museum Street,Londan W.C-1 (1985)
    • اشاعت : 1985

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY