تیری مخمور چشم اے مے نوش

تاباں عبد الحی

تیری مخمور چشم اے مے نوش

تاباں عبد الحی

MORE BYتاباں عبد الحی

    تیری مخمور چشم اے مے نوش

    جن نے دیکھی سو ہو گیا خاموش

    کئی فاقوں میں عید آئی ہے

    آج تو ہو تو جان ہم آغوش

    اپنے تئیں سر پہ ہاتھ جو نہ رکھے

    اس کے سر پہ نہ ماریے پاپوش

    عشق میں میں ترے ہوا مجنوں

    کس کو ہے عقل اور کہاں ہے ہوش

    پالکی بھی مجھے خدا نے دی

    تو بھی تاباںؔ رہا میں خانہ بدوش

    مآخذ:

    Deewan-e-Taban Rekhta Website)
    • Deewan-e-Taban Rekhta Website)

    Additional information available

    Click on the INTERESTING button to view additional information associated with this sher.

    OKAY

    About this sher

    Lorem ipsum dolor sit amet, consectetur adipiscing elit. Morbi volutpat porttitor tortor, varius dignissim.

    Close

    rare Unpublished content

    This ghazal contains ashaar not published in the public domain. These are marked by a red line on the left.

    OKAY